خوش آمدید مہمان
ہمارے فورم پر لکھنے کے لیے آپ کو شمولیت اختیار کرنی ہوگی.

اسمِ صارف
  

پاس ورڈ
  





فورم میں تلاش کریں

(اعلی تلاش)

فورم کی شُماریات
» ارکان: 220
» نیا رکن: جبرائیل کنگ
» فورم کے دھاگے: 704
» فورم کے مراسلے: 4,794

مُکمل شُماریات

آن لائن صارفین
اس وقت 8 صارفین آن لائن ہیں.
» 0 رکن | 8 مہمان

تازہ ترین دھاگے
لینکس کے علاوہ موضوعات کا...
شکایات ومشورہ
آخری مراسلہ: asakpke
11-23-2014, 08:21 AM
» جوابات: 19
» مشاہدات: 2,858
اردو انسٹالر کا آرچ پیکج
عام فورم
آخری مراسلہ: imranr
05-21-2014, 08:05 AM
» جوابات: 12
» مشاہدات: 1,597
لینکس میں اردو فور...
لینکس مسائل اور حل
آخری مراسلہ: محمد علی مکی
05-20-2014, 11:04 AM
» جوابات: 5
» مشاہدات: 770
پاک لینکس۔۔۔۔۔۔۔ بغیر سی۔...
پاک لینکس مسائل اور حل
آخری مراسلہ: تجمل حسین
05-19-2014, 07:15 PM
» جوابات: 8
» مشاہدات: 4,409
فائر فاکس اردو زبان کا مس...
لینکس مسائل اور حل
آخری مراسلہ: تجمل حسین
04-24-2014, 08:02 PM
» جوابات: 12
» مشاہدات: 2,496
پاک لینکس سنامون نسخہ
پاک لینکس تجاویز وآراء
آخری مراسلہ: محمد علی مکی
03-13-2014, 10:42 AM
» جوابات: 30
» مشاہدات: 8,864
اوبنٹو میں پاسورڈ کو کیسے...
لینکس مسائل اور حل
آخری مراسلہ: تجمل حسین
02-01-2014, 10:22 PM
» جوابات: 3
» مشاہدات: 1,001
اردو کوڈر کے لیے پسند اور...
شکایات ومشورہ
آخری مراسلہ: محمد علی مکی
01-27-2014, 10:38 PM
» جوابات: 4
» مشاہدات: 1,156
اردو لائبریری معاون لینکس...
لینکس اطلاقیے اور ان کے ٹیوٹوریل
آخری مراسلہ: تجمل حسین
01-26-2014, 10:40 PM
» جوابات: 34
» مشاہدات: 9,641
پاک لینکس کی تنصیب
پاک لینکس مسائل اور حل
آخری مراسلہ: تجمل حسین
01-26-2014, 07:08 AM
» جوابات: 8
» مشاہدات: 3,592

 
Lightbulb پاک لینکس کے مرکزی نسخے کا اجراء
ارسال کردہ از: محمد علی مکی - 07-04-2013, 03:44 PM - اوپن سورس خبریں - جوابات (8)

[تصویر: PakLinux-Logo.png]

[تصویر: paklinux-mate-00-300x187.png]

گنوم 2 نے ایک طویل عرصہ تک لینکس کی دنیا میں راج کیا، یہ بلا مقابلہ لینکس کا ایک بہترین روایتی ڈیسک ٹاپ تھا جسے ہر کوئی پسند کرتا تھا، اس کی اسی مقبولیت کے سبب اردو برادری نے اسے اردو قالب میں ڈھالنے کی کوشش کی جو ناکامی سے دوچار ہوئی، 2011 کے اوائل میں پاک لینکس منصوبے کے تحت ہم اسے اردوانے کا کام کر ہی رہے تھے کہ گںوم 3 کے اعلان کے ساتھ ہی لینکس کی دنیا کا شاید اب تک کا سب سے بڑا تنازعہ کھڑا ہوگیا کیونکہ گنوم 3 کی جو شکل نکلی تھی وہ شاید ہی کسی لینکس صارف کو پسند آئی ہو، خود لینکس کرنل کے بانی لینس ٹرووالڈز جو گنوم 2 استعمال کرتے تھے نے گنوم 3 پر بھرپور تنقید کی اور گنوم چھوڑ کر ایکسفس ڈیسک ٹاپ پر منتقل ہوگئے، گنوم 3 دراصل گنوم 2 کی موت تھی، اس کے منفی اثرات لینکس برادری پر جو پڑتے سو پڑتے مگر ہمیں اپنا سارا منصوبہ اور محنت غارت ہوتی ہوئی نظر آرہی تھی، مگر بھلا ہو کچھ جانبازوں کا جنہوں نے الگ سے گنوم 2 کے روایتی ڈیسک ٹاپ کو جاری رکھنے کا فیصلہ کیا اور یوں میٹ نے جنم لیا اور اس کے ساتھ ہی ہماری جان میں جان آئی، پاک لینکس کا مرکزی نسخہ اسی پر مبنی ہے، یہ یقیناً گنوم 2 کی یادیں تازہ کردے گا۔

تصاویر یہاں ملاحظہ کریں۔

ڈاؤنلوڈ کریں:

پاک لینکس 1 جناح (مرکزی نسخہ)

MD5 sums:
bd6319c17eca7d1e3066f614a0beb762

لائیو چلانے پر آپ سے لاگ ان اور پاس ورڈ طلب کیا جائے گا، اس کی تفصیل درج ذیل ہے:

لاگ ان: paklinux
پاس ورڈ: کچھ نہیں (انٹر دبائیں)

مسائل یہاں رپورٹ کریں

اس طرح جناح سلسلہ اپنے اختتام کو پہنچا۔۔

آپ کی آراء کا انتظار رہے گا۔

یہ عنصر چھاپیں

Thumbs Up پاک لینکس کا اجراء
ارسال کردہ از: محمد علی مکی - 05-17-2013, 06:46 PM - اوپن سورس خبریں - کوئی جوابات نہیں

[تصویر: PakLinux-Logo.png]

پاک لینکس 1 جناح گنوم 3 ڈیسک ٹاپ
[تصویر: paklinux-jinnah-gnome3-011-300x187.png]

پاک لینکس 1 جناح ایکسفس ڈیسک ٹاپ
[تصویر: paklinux-jinnah-xfce-011-300x187.png]

اردو کمپیوٹنگ کے میدانِ پُرخار میں اب تک ہوئی ترقی دیگر زبانوں کے مقابلے میں کافی سست اور غیر تسلی بخش ہے، اس کا زیادہ زور ویب کی طرف رہا ہے، جہاں تک ڈیسک ٹاپ کمپیوٹر کی بات ہے تو اسے صرف اردو لکھنے کے قابل بنانے پر ہی اکتفاء کیا گیا، اس غرض کی تکمیل کے لیے اسباق، کلیدی تختوں اور ترتیبات کی تشکیل کے لیے کئی چھوٹے چھوٹے اطلاقیوں کی بھرمار رہی اور تقریباً نصف دہائی تک اس سے زیادہ کچھ نہ ہوسکا، اس ضمن میں سب سے اہم سنگِ میل نستعلیق فونٹ کی تیاری تھا جس نے اردو کمپیوٹنگ کے میدان میں ایک انقلاب برپا کردیا، لیکن جلد ہی اس کے فوائد کو بھی ویب کی طرف موڑ کر محدود کردیا گیا اور اگلی نصف دہائی تک صرف ❞اردو بلاگنگ❝ پر ہی زور دیا جاتا رہا جو آگے چل کر ایک ❞فوبیا❝ کی شکل اختیار کر گیا، نتیجتاً ویب کے وسیع میدان میں بھی صرف بلاگ ہی بنائے جاتے رہے اور دیگر شعبوں کو قطعی نظر انداز کردیا گیا، ❞بلاگنگ کلچر❝ نے ویب پر کسی اور کلچر کو پنپنے ہی نہ دیا نا ہی کمپیوٹنگ کے دیگر شعبوں کی طرف توجہ کرنے دی، نوے کی دہائی کے نصف میں انٹرنیٹ کے آغاز پر عرب ممالک میں ❞فورم کلچر❝ پروان چڑھا اور تقریباً ایک دہائی تک صورتِ حال ایسی ہی رہی جو اب جا کر آہستہ آہستہ تبدیل ہو رہی ہے، اردو دان طبقے نے بھی وہی تاریخ دہرائی ہے مگر فورم کی بجائے بلاگنگ کلچر کو پڑوان چڑھا کر، اب دیکھیے ہمارا اونٹھ کس کروٹ بیٹھتا ہے، کیا ہم محض بلاگنگ ہی کرتے رہیں گے یا آگے بڑھ کر کچھ اور بھی کریں گے؟

حقیقی اردو کمپیوٹنگ تب تک شروع نہیں ہوسکتی جب تک کہ آپ کا کمپیوٹر بھی اردو نہ بولے، اردو کو صرف ویب تک محدود کرنا کسی طور دانشمندانہ اقدام نہیں، ویب پر اردو کی حاضری یقیناً ہونی چاہیے مگر اس کا آغاز ڈیسک ٹاپ سے ہونا چاہیے، آپریٹنگ سسٹم کوئی بھی ہوں، دنیا کی ہر بڑی زبان میں دستیاب ہوتے ہیں، یہ زبانیں بھی صرف وہ ہوتی ہیں جن کے بولنے والوں کو اپنی اور اپنی زبان کی بقاء کی فکر ہوتی ہے، باقی کی زبانیں ناپیدگی کے خطرے سے دوچار ہیں اور کچھ تو واقعتاً ہو بھی گئی ہیں، مائکروسوفٹ کی ونڈوز دنیا کی ہر زبان میں جاری کی جاتی ہے، مثلاً مشرقِ وسطی میں ہر نئے نسخے کا عربی نسخہ جاری کیا جاتا ہے، اسی طرح جرمنی میں جرمن اور سپین میں ہسپانوی، مگر اردو نسخہ کبھی جاری نہیں کیا جاتا، ایک استثنائی حالت ونڈوز ایکس پی کے اردو پیک کی صورت میں ضرور ملتی ہے مگر اس کے بعد مائکروسوفٹ نے کچھ نہیں کیا اور ایپل نے تو یہ تکلف بھی نہیں کیا، کیا یہ تشویش کی بات نہیں؟ اور کیا ہمیں اس نہج پر سوچنے اور اقدامات اٹھانے کی ضرورت نہیں؟

ہم شاید عالمی اداروں کو مجبور نہ کر سکتے ہوں لیکن معاملات کو اپنے ہاتھ میں ضرور لے سکتے ہیں، اور اس مقصد کی تکمیل کے لیے آزاد مصدر (اوپن سورس) سوفٹ ویئر ہی وہ واحد ذریعہ ہیں جن سے اردو کمپیوٹنگ کے اعلی مقاصد بھرپور طریقے سے حاصل کیے جاسکتے ہیں، ایسا بھی نہیں ہے کہ اس نہج پر اس سے پہلے کبھی سوچا نہیں گیا، ماضی میں لینکس کے مشہورِ زمانہ ڈیسک ٹاپ گنوم کے اردو ترجمہ کی کوشش ضرور ہوئی مگر یہ ناکامی سے دوچار ہوئی اور بات صرف بلند وبانگ دعووں تک ہی محدود رہی اور بالآخر خاموشی چھا گئی۔

پاک لینکس اسی خاموشی کو توڑنے کی ایک کوشش ہے، ہمارا یقین ہے کہ زبانِ غیر سے شرحِ آرزو نہیں کی جاسکتی، پاک وہند کے اردو دان طبقے کی اکثریت انگریزی سے نا بلد ہے اور انفارمیشن ٹیکنالوجی کے اس انقلاب سے کما حقہ فیض یاب نہیں ہو پا رہی، انگریزی سے نا بلند صارف کمپیوٹر سے گزر کر ہی ویب تک پہنچے گا اور اگر وہ پہلے مرحلے پر ہی گھبرا گیا تو ویب تک کبھی نہیں پہنچ پائے گا اب آپ بھلے ویب کو اردو سے بھر دیجیے، ایسے صارف کے لیے اس کا کوئی فائدہ نہیں۔

لینکس کے ڈیسک ٹاپوں کو مقامیانے کے سابقہ منصوبوں کی ناکامی کو دیکھتے ہوئے ہم نے 2009 میں ایک جامع اور مستقل اردو لینکس کے منصوبے پر سنجیدگی سے غور کرنا شروع کیا، اس سلسلے میں اردو برادری سے رابطے اور مشورے کیے، بہت سوں نے اس منصوبے کے خیال کو سراہا اور ساتھ دینے کے وعدے کیے مگر وہ وعدہ ہی کیا جو وفا ہوجائے کی مصداق جب عمل کا وقت آیا تو سب ساتھ چھوڑ گئے، آخر کار ہم نے اکیلے ہی جانبِ منزل چلنے کا فیصلہ کیا اس امید کے ساتھ کہ جب چل پڑیں گے تو کاروان بنتا چلا جائے گا، اردو سلیکس اور اردو ابنٹو ہمارے اس تنہا اور ❞سست❝ سفر کے عکاس ہیں، یہ منزل نہیں شروعات ہے، آپ کو اس کاروان میں شامل ہونے کی کھلی دعوت ہے۔

سچ تو یہ ہے کہ یہ منصوبہ دو سال قبل بھی کافی حد تک تیار تھا اور جاری کیا جاسکتا تھا، مگر بہت سے تکنیکی مسائل اس کے اجراء کی راہ میں آڑے آتے رہے، دراصل یہ کام اتنا آسان تھا نہیں جتنا کہ شروع میں ہم نے اسے سمجھ رکھا تھا، ایک مسئلے سے جوجتے تو دوسرا سر اٹھا لیتا اور ہم کمال کے حصول کی غلط فہمی میں مبتلا اسے خامیوں سے پاک کرنے کی جستجو میں لگے رہے اور وقت گزرتا چلا گیا، دو سال کے بعد جا کر ہم نے یہ سبق سیکھا کہ حصولِ کمال اگر نا ممکن نہیں تو مشکل ضرور ہے، خاص طور سے اگر تکنیکی اور فنی اہلیت کی بھی کمی ہو، اس دوران اوپن سورس کی دنیا میں بہت کچھ تبدیل ہوا جس کے نتیجے میں پیچیدگیوں میں مزید اضافہ ہوتا چلا گیا اور کام مزید بڑھ گیا، لہذا اس سال ہم نے اسے ہر حال میں جاری کرنے کا فیصلہ کیا کہ خامیاں تو بڑی بڑی ڈیسٹریبیوشنز میں بھی ہوتی ہیں، پاک لینکس بھی اس سے مبرا نہیں، اس میں بھی خامیاں موجود ہیں، مگر ہمیں یقین ہے کہ وقت کے ساتھ ساتھ ہم ان خامیوں پر قابو پا لیں گے اور یہ ایک بہترین اردو ڈیسٹریبیوشن کے طور پر ابھر کر سامنے آئے گی اور اردو کمپیوٹنگ کے میدان میں ایک اہم سنگِ میل ثابت ہوگی۔

پاک لینکس میں ہم نے پوری کوشش کی ہے کہ صرف ڈیسک ٹاپ کا ہی ترجمہ نہ کیا جائے بلکہ روز مرہ کے استعمال کے دیگر سوفٹ ویئر بھی اردو قالب میں پیش کیے جائیں جیسے ویب براؤزر، سپریڈ شیٹ، مسنجر، ای میل کلائینٹ، ڈاؤنلوڈ منیجر، ٹیکسٹ ایڈیٹر، تصاویر ایڈیٹر، ایڈریس بک، ویڈیو پلیئر، آڈیو پلیئر، ویڈیو ایڈیٹر وغیرہ۔۔ الغرض ہر چیز آپ کو بزبانِ اردو وبخطِ نستعلیق ملے گی۔

پاک لینکس فی الحال دو الگ الگ نسخوں میں پیش کی جا رہی ہے، گنوم 3 اور ایکسفس ڈیسک ٹاپ، ایلکسڈی کو پذیرائی نہ ملنے کے سبب منصوبے سے خارج کردیا گیا ہے، تاہم پاک لینکس کا مرکزی نسخہ ابھی تیاری کے مراحل میں ہے اور جلد ہی جاری کردیا جائے گا۔

اب یہ منصوبہ آپ کے سامنے ہے، پاک لینکس کے متعلق دیگر تفصیلات اور منصوبے آپ کو اس سائٹ کے مختلف صفحات پر مل جائیں گے جبکہ جاری کیے جانے والے دونوں نسخوں کی تصاویر آپ یہاں ملاحظہ کر سکتے ہیں، یہ ویب سائٹ ابھی زیرِ تکمیل ہے، اس لیے بہت سے روابط اور صفحات ابھی نا مکمل ہیں اور ان کی تکمیل پر ابھی کام جاری ہے، ترجمہ بھی جلد ہی مناسب پلیٹ فارم کے ذریعے مفادِ عامہ کے لیے پیش کردیا جائے گا۔

ڈاؤنلوڈ کریں:

پاک لینکس 1 جناح گنوم ڈیسک ٹاپ

پاک لینکس 1 جناح ایکسفس ڈیسک ٹاپ

MD5 sums:
جناح گنوم: d533956dd526cdc7634093eb0b229101
جناح ایکسفس: e8ea09dfe5e563d85901dbbce23b9e6d

مسائل یہاں رپورٹ کریں

آپ کی آراء کا انتظار رہے گا۔

یہ عنصر چھاپیں

Thumbs Down مائکروسوفٹ کا پاس ورڈ
ارسال کردہ از: محمد علی مکی - 09-26-2012, 10:39 AM - آئی ٹی نیوز - کوئی جوابات نہیں

[تصویر: hotmail-pass.jpg]

کسی بھی اکاؤنٹ کو زیادہ محفوظ بنانے کا ایک طریقہ طویل پاس ورڈ کا استعمال ہے تاہم اگر آپ ہاٹ میل کے صارف ہیں تو سب سے طویل پاس ورڈ جو آپ استعمال کر سکتے ہیں وہ صرف 16 حروف پر مشتمل ہوسکتا ہے، سیکورٹی کے ماہرین نے پتہ چلایا ہے کہ چاہے آپ کتنا ہی طویل پاس ورڈ استعمال کر رہے ہوں، مائکروسوفٹ صرف پہلے 16 حروف کی تصدیق کرتا ہے اور باقی کاٹ دیتا ہے.

مائکروسوفٹ نے اس بات سے انکار نہیں کیا ہے اور کہا ہے کہ یہ چیز برسوں سے موجود ہے اور اس کی تاویل یہ پیش کی ہے کہ اس کی تحقیق کے مطابق یہ لازمی نہیں ہے کہ طویل پاس ورڈ ہی کسی اکاؤنٹ کو زیادہ محفوظ بنائے گا بلکہ اس کی بجائے پیچیدہ پاس ورڈ اس سے کہیں بہتر ہوتے ہیں، اس کے باوجود مائکروسوفٹ نے کہا ہے کہ وہ اس مسئلے کو حل کرنے پر کام کر رہے ہیں اور جلد ہی طویل پاس ورڈ کے استعمال کی اجازت دے دی جائے گی.

اگر گوگل اور مائکروسوفٹ کا موازنہ کیا جائے تو معلوم ہوگا کہ ہاٹ میل کے مقابلے میں گوگل کوئی 100 حروف پر مشتمل پاس ورڈ استعمال کرنے کی اجازت دیتا ہے.

یہ عنصر چھاپیں

Exclamation ابنٹو 12.10 میں ایمازان
ارسال کردہ از: محمد علی مکی - 09-26-2012, 10:31 AM - اوپن سورس خبریں - کوئی جوابات نہیں

[تصویر: unity-shopping-results.jpg]

ابنٹو کا نسخہ 12.10 جو آئندہ اکتوبر کو جاری ہوگا میں ہوم لینز کے ذریعے کی جانے والی کسی بھی تلاش کے نتائج میں ایمازان کے تلاش کے نتائج بھی شامل ہوں گے، ہوم لینز سسٹم میں فائلیں یا پروگرام تلاش کرتا ہے جس کے ذیل میں اضافی تجاویز کے طور پر امازان کے نتائج بھی ظاہر ہوں گے تاہم یہ نتائج اصل نتائج پر اثر انداز نہیں ہوں گے، اس اقدام کو کافی تنقید کا سامنا ہے اور بعض لوگ اسے صارف کی پرائیویسی کی خلاف ورزی قرار دے رہے ہیں.

مارک شٹل ورتھ جو کمپنی کے ڈائریکٹر کے عہدے سے دستبردار ہوگر ابنٹو کو بہتر بنانے پر لگے ہوئے ہیں نے کہا ہے کہ یہ خاصیت صارف کی کسی طرح کی کوئی بھی معلومات جمع نہیں کرتی اور یہ محض ابنٹو کے ذریعے تھوڑی سی آمدنی حاصل کرنے کا ایک ذریعہ ہے.

یہ عنصر چھاپیں

Rainbow ایپل اور نقشوں کے مسائل
ارسال کردہ از: محمد علی مکی - 09-26-2012, 10:19 AM - آئی ٹی نیوز - کوئی جوابات نہیں

[تصویر: iphone51.jpg]

لگتا ہے کہ ایپل کے نقشہ جات جو اس کے iOS 6 نظام کا حصہ تھا توقعات پر پورا نہیں اترا، سروس غلطیوں سے بھرپور ہے اور بیشتر اوقات درست مقامات کے تعین میں غلطی کر جاتی ہے جس کی وجہ سے کمپنی کو کافی تنقید کا سامنا ہے.

ایپل نے اپنے نقشہ جات میں موجود مسائل کا اعتراف کیا ہے اور معلوم ہوتا ہے کہ اس نے کئی ڈیولپروں کو اس سروس کو جلد از جلد بہتر کرنے پر مامور کردیا ہے، ٹک کرنچ کا دعوی ہے کہ ایپل گوگل کے ڈیولپروں کو اپنی طرف راغب کرنے کی کوشش کر رہا ہے جو گوگل میں روٹین کے کام کو جاری رکھنے کی بجائے نقشوں کا ایک نیا پلیٹ فارم بنانا چاہتے ہیں.

بہت سی کمپنیوں نے جن میں موٹورولا بھی شامل ہے نے اس مسئلے کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ایسے اشتہارات جاری کیے ہیں جن میں ایپل کے نقشہ جات کے مقابلے میں گوگل کے نقشہ جات کی درستگی کی تعریف کی گئی ہے جنہیں iLost کا نام دیا گیا ہے.

مصدر

یہ عنصر چھاپیں